ڈائریکٹوریٹ آف بلوچستان کی طرف سے ریزرو سیٹس کے حوالے سے عدم متوجہی اور میرٹ لسٹ کی نامزدگی کی تاخیر انتہائی تشویش ناک ہے اور اس کی مزمت کرتے ہیں۔


 ڈائریکٹوریٹ آف بلوچستان کی طرف سے ریزرو سیٹس کے حوالے سے عدم متوجہی اور میرٹ لسٹ کی نامزدگی کی تاخیر انتہائی تشویش ناک ہے اور ہم اس کی مذمت کرتے ہیں ۔

بی ایس سی پنجاب

بلوچ اسٹوڈنٹس کونسل پنجاب کے ترجمان نے اپنی جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ ڈائریکٹوریٹ آف بلوچستان کی طرف سے ریزرو سیٹس کی نامزدگی کی تاخیر انتہائی افسوس کی بات ہے۔ بی ایس سی پنجاب کی طرف سے ڈائریکٹوریٹ آف بلوچستان کو ایک ڈرافٹ بھی بھیجا گیا تھا ۔ لیکن ڈائریکٹوریٹ کی طرف سے ہمیں کوئی جواب موصول نہیں ہوا ہے۔ 

 07 اگست 2023 کو ڈائریکٹوریٹ آف بلوچستان کی طرف سے پنجاب کے مختلف یونیورسٹیوں کے لئے داخلے کا اعلان کیا گیا۔ 

پھر 21 اور 22 ستمبر 2023 کو ڈائریکٹوریٹ آف بلوچستان نے داخلوں کے لیے ٹیسٹ کا انعقاد کیا۔

لیکن ابھی تک ڈائریکٹوریٹ اسٹوڈنٹس کو داخلے کیلئے نامزد کرنے میں ناکام رہا ہے ۔

پنجاب کے تمام یونیورسٹیوں نے اپنا داخلہ بند کیا ہوا ہے کیونکہ ابھی پہلے سمسٹر والوں کے درمیانی مدت کے امتحان شروع ہونے والے ہیں۔ یونیورسٹی انتظامیہ کی طرف سے ہمیں یہ کہا گیا ہے کہ اس دفعہ آپ لوگوں کے اسٹوڈنٹس بہت دیر کر رہے ہیں، اب ہم اُن کو داخلہ نہیں دے سکتے ہیں۔ 

ہم یہ سمجھتے ہیں کہ اگر اس دفعہ کسی بھی یونیورسٹی کی طرف سے اسٹوڈنٹس کو داخلہ نہیں ملا تو اُس کا زمہ دار ڈائریکٹوریٹ آف بلوچستان کو ٹھہرایا جائے گا۔

اور دوسری جانب لائیو سٹاک بلوچستان کی طرف سے پنجاب کے مختلف یونیورسٹیوں میں ریزرو سیٹس ہیں وہ بھی تاخیر کا شکار ہیں ۔ ابھی تک DVM والوں کی لسٹس نہیں لگی ہیں۔ 


آخر میں بی ایس سی پنجاب کے ترجمان نے کہا ہے کہ ہم ایک بر پھر ڈائریکٹوریٹ آف بلوچستان کو متوجہ کرنا چاہتے ہیں کہ وہ جلد از جلد اسٹوڈنٹس کو داخلے کے لئے نامزد کرے اور تمام یونیورسٹیوں کی داخلے کو یقینی بنایا جائے تاکہ تمام اسٹوڈنٹس کا داخلہ وقت پہ ہو جائے اور وہ باقاعدہ اپنی کلاسز کا آغاز کریں۔ اگر ڈائریکٹوریٹ آف بلوچستان کا رویہ درست نہیں ہوا اور سنجیدگی کا مظاہرہ نہیں دکھایا پھر ہم احتجاج کی طرف جائینگے۔

Previous Post Next Post